ملازمین نے بی آرٹی کی افتتاح کو ناکام بنانے یا ان کی خون سے افتتاح کرنے کا اعلان کردیا

پشاور ( دی خیبرٹائمز جنرل رپورٹنگ ڈیسک ) پشاور میں بی آرٹی کے ملازمین اور سیکیورٹی گارڈز نے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا ہے، کہ بی آرٹی کے افتتاح سے قبل ان کے واجبات آدا کرنی چاہئے، بصورت دیگر وہ اپنی جانوں پر کھیل کر بی آرٹی کی افتتاح کو ناکام بنائینگے.
بی آرٹی کے ملازمین نے دھمکی دی ہے کہ اگر ان کی تنخواہیں افتتاح سے قبل نہ دئے تو وہ بی آرٹی کے افتتاح کرنے والے بسوں کے سامنے لیٹ کر اپنی جانیں دینگے یا اس دوران خودسوزی کرینگے.
بی آرٹی کے ملازمین اور سیکیورٹی گارڈز نے کہا ہے کہ وہ بار بار ڈپٹی کمشنر پشاور. صوبائی حکومت. ڈائریکٹر جنرل پشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی وزیر بلدیات. پشاور پولیس اور پشاور پریس کلب کے سامنے ایک ہفتہ دھرنا کے باوجود کسی نے ان کی فریاد سنی اور نہ ہی کسی نے اس مسلے پر توجہ دی بلکہ سب نے مجرمانہ خامو شی اختیار کی.
اب بی آرٹی کے متاثرہ ملازمین اور سیکیورٹی گارڈز نے فیصلہ کیا ہے کہ وہ افتتاح والے دن کا انتظار کررہے ہیں. جہاں مختلف جگہوں پر وہ بی آرٹی روٹ پر اپنے حقوق کیلئے احتجاج کرینگے. بلکہ پوری دنیا کو حیران اور پریشان کرنے کیلئے ثابت کرینگے کہ مزدور اپنی جانیں کس طرح دے سکتے ہیں؟
متاثرہ ملازمین نے یہ بھی کہا ہے کہ بی آرٹی کا افتتاح ان کے خون سے ہوگی. جس کی تمام تر ذمہ داری وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلی خیبر پختونخوا محمودخان پر عائد کی جائیگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں